Home / Poetry

Poetry

عوامی شاعری میں عقیدے کا اظہار ،،

میں چٹھی پاواں سجناں نوں – وچ لفظاں دے اتھرو پَرَو کے ! خیر ھووے سجناں دی ، میں منگیاں دعاواں َرو رَو کے !! ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،، عوامی عقیدے کا اظہار ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،، کئ ٹونے،کئ جادو دھاگے ،سجناں ھین کرائے ! پیراں تے فقیراں دے وی مِنتاں ترلے پائے ! رملی ، …

Read More »

دمِ اضطراب مجھ کو جو خیالِ یار آئے ! میرے دل میں چین آئے تو اسے قرار آئے ! میرے دل کو دردِ الفت وہ سکون دے الہی ! میری بےقراریوں کو نہ کبھی قرار آئے ! سببِ وفورِ رحمت میری بے زبانیاں ھیں ! نہ فغاں کے ڈھنگ جانوں …

Read More »

اللہ کو دینے کی ادا سیکھیں ،،،

و يجعلون لله ما يكرهون وتصف ألسنتهم الكذب أن لهم الحسنى ( النحل- 62 ) اور اللہ کے لئے وہ چیز مختص کرتے ھیں جس کو خود ناپسند کرتے ھیں اور سمجھتے ھیں کہ انہیں بڑی نیکی ملے گی ،، اگر کوئی شخص مہنگی چیز اللہ کی راہ میں دے …

Read More »

آئے ھیں وہ مزار پہ،،،،،،، گھونگھٹ اتار کے ! — شاعری

آئے ھیں وہ مزار پہ،،،،،،، گھونگھٹ اتار کے ! مجھ سے نصیب اچھے ھیں میرے مزار کے ! بجلی کبھی گری ،،،،،،،،کبھی صیاد آ گیا ! ھم نے تو چار دن بھی نہ دیکھے بہار کے ! صیاد تیرے حکمِ رھائی کا ،،،،،،، شکریہ ! ھم تو قفس میں کاٹ …

Read More »

آنکھوں کے چراغوں میں اُجالے نہ رہیں گے ! آ جاؤ کہ پھر ” دیکھنے والے ” نہ رھیں گے ! جا شوق سے لیکن پلٹ آنے کے لیے جا ! ہم دیر تک اپنے کو سنبھالے نہ رہیں گے ! اے ذوقِ سفر خیر ھو نزدیک ھے “منزل ” …

Read More »

عشق نامہ

جگ ھے نشانہ عشق دا ! گھر گھر فسانہ عشق دا ! منزل ھے گہری عشق دی ! وکھری کچہری عشق دی ! جنگل وچ ڈیرے عشق دے ! عرشاں تے پھیرے عشق دے ! مَندا اے گل مطلوب دی ! سُندا اے گل محبوب دی ! رکھدا عقل نال …

Read More »

مل کے بچھڑے جو تم مٹ گئ ھر خوشی ! آرزؤں کا ســـارا جہــــــــــــــاں لُـــــٹ گیا ! راس آئی نہ فـــــرقت کســــــی کو صنـم ! تم وھــــــاں لُٹ گئے میں یہـــاں لــٹ گیا ! رات بھــر عاشقـوں نے منائــی خــــوشی ! میــــری تــربت پہ لــوگـــوں کا میـــلـہ لگا ! وہ …

Read More »

سنتِ رسول ﷺ کی اقسام اور خلفاءِ راشدین کے اختیارات !

ھمارا اصل المیہ یہ ھے کہ ھمیں اسلام ایک ریاست اور نظام کی بجائے ،سپیئر پارٹس کی شکل میں ملا ھے ! جسے ھر مکتبہ فکر اپنی ھر مسجد میں اپنی اپنی مرضی سے جوڑ رھا ھے ، یہ الگ بات ھے کہ ایک مسجد کا اسلام دوسری مسجد کے …

Read More »

پروردگارِ عالم تیرا ھی ھے سہارا ! تیرے سوا جہاں میں کوئی نہیں ھمارا !۔۔ شاعری

پروردگارِ عالم تیرا ھی ھے سہارا ! تیرے سوا جہاں میں کوئی نہیں ھمارا ! نوح کا سفینہ تُو نے طوفان سے بچایا ! مشکل کے وقت تُو ھی بندوں کے کام آیا ! مانگی خلیل نے جب تجھ سے دعا خدایا ! آتش کو تُو نے فوراً اک گلستاں …

Read More »

ایں قدَر مَستم کہ از چشمَم شراب آید بروں ! وَز دلِ پُر حسرتم “دُودِ کباب ” آید بروں ! ترجمہ: میں اس قدر مستی میں ھوں کہ میری آنکھوں سے شراب باہر آ رھی ہے اور میرے حسرتوں بھرے دلِ سے کباب کی مانند دھواں ا ٹھ رہا ھے …

Read More »