Home / Poetry / آئے ھیں وہ مزار پہ،،،،،،، گھونگھٹ اتار کے ! — شاعری

آئے ھیں وہ مزار پہ،،،،،،، گھونگھٹ اتار کے ! — شاعری

آئے ھیں وہ مزار پہ،،،،،،، گھونگھٹ اتار کے !
مجھ سے نصیب اچھے ھیں میرے مزار کے !
بجلی کبھی گری ،،،،،،،،کبھی صیاد آ گیا !
ھم نے تو چار دن بھی نہ دیکھے بہار کے !
صیاد تیرے حکمِ رھائی کا ،،،،،،، شکریہ !
ھم تو قفس میں کاٹ چکے دن بہار کے !
مقتل میں حال پوچھو نہ مجھ بےقرار کے !
تم اپنے گھر کو جاؤ چُھری پھیر پھار کے !
اللہ جانے قبر ھے کس ،،،،،،، نامراد کی !
ارمان رو رھے ھیں سرھانے مزار کے !
وعدہ وہ کر گئے ھیں قمر مجھ سے شام کا !
کیسے کٹیں گے چار پہر ،،،،،،،،، انتظار کے ؟

x (x)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *