“ملے گی شیخ کو جنت ھمیں دوزخ عطا ھو گا !
بس “اتنی بات “کی خاطر تیرا محشر بپا ھو گا ؟
ھم اتنا جانتے ھیں حشر کے دن ھم سے کیا ھو گا ؟
سب اُسکو دیکھتے ھوں گے وہ ھم کو دیکھتا ھو گا !
جہنم ھو یا جنت جو بھی ھو گا فیصلہ ھو گا !
یہ کیا کم ھے کہ ” اُن “کا میرا سامنا ھو گا !
رہیں دو دو ” فرشتے ” ساتھ تو انصاف کیا ھو گا ؟
کسی نے کچھ لکھا ھو گا کسی نے کچھ لکھا ھو گا”

Leave a Comment