Home / Hadith / Mozoat / مولوی دو قسم کے ھوتے ھیں

مولوی دو قسم کے ھوتے ھیں

1- وہ مولوی جن کی اندر ھوتی ھے اور دل پہ ھوتی ھے ، اور یہ عموماً علامہ کہلانا پسند فرماتے ھیں ،، مثلاً علامہ اقبال وغیرہ وغیرہ
2- وہ مولوی جن کی داڑھی باھر ھوتی ھے اور ٹھوڑی پہ ھوتی ھے ،، یہ عام طور پہ مفتی صاحب ، مولوی صاحب ،یا مولانا کہلاتا پسند فرماتے ھیں ،،،،،،،
ھمیں ھر یا تو پہلی قسم میں سے نظر آتا ھے ،یا دوسری قسم میں سے ،، ھمیں سب اچھے لگتے ھیں ،،،،،
اس مطلب یہ ھے کہ میں ھر داڑھی اور غیر داڑھی والے کو اپنے سے اچھا مسلمان سمجھتا ھوں ،میرا رب گواہ ھے اور یہ اس کی خاص الخاص عنایت ھے کہ کبھی ایک لمحے کے لئے بھی مجھے یہ گمان نہیں گزرا کہ اس آدمی کی داڑھی نہیں ھے تو یہ مجھ سے کم درجے کا مسلمان ھے ، یا میں اس سے بہتر مسلمان ھوں ،، یہی گمان رکھتا ھوں کہ اس سے اگر ایک سنت میں کوتاھی ھوئی ھے تو مجھ میں 50 سنتوں کی اور کئ فرائض کی کوتاھی ھو گی ،، نہ ھی کبھی کسی پینٹ شرٹ والے کو اپنے سے کمتر سمجھتا ھوں یا اپنی نماز کو کسی پینٹ شرٹ والے کی نماز سے بہتر سمجھتا ھوں ، نہ ھی کبھی مجھے کسی پینٹ شرٹ والے کے پیچھے نماز پڑھتے ھوئے کراھت آئی ھے ،، سارے مجھ سے اچھے ھیں ،، بس میرا مولا میں سب کے پردے رکھے ،، دلہن وھی جو پیا من بھائے !!

Visit to Read Books and Articles of Dr. Muhammad Hamidullah

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *